Showing posts with label Allaamah Kaukab Noorani Okarvi. Show all posts
Showing posts with label Allaamah Kaukab Noorani Okarvi. Show all posts

Friday, May 13, 2022

Visit your parents grave on friday and offer Faatihah-Ieesaal e Sawaab- Auraad e Mashaaikh

If your Parents have passed away, then you should visit their graves every Friday. …If their graves
Are in a different city then whenever you are there, you should visit their graves. From your home, do Faatihah Khuwaani fo Ieesaal
e Sawaab [forwarding of rewards] to them daily.
Excerpt- Auraad e Mashaaikh- Hazrat Allaamah Kaukab Noorani Okarvi


Hazrat Hamzaa [Radiyal Laah Anha] Yaum e Urs 15th Shawwal-

Hazrat Hamzaa 
[Allaah be Pleased with Him]
 Yaum e Urs 15th Shawwal-

Saturday, April 23, 2022

SHAB E QADR- 2-5-Ramadaan /Ramadan- Hazrat Allaamah Kaukab Noorani Okarvi












امام اہلسنت اور شان علی رضی اللہ عنہ۔ Article-Hazrat Ali/Alee [Radiyal Laah Anhu] Allaamah Kaukab Noorani Okarvi


امام اہلسنت اور شان علی رضی اللہ عنہ۔۔

امام اہلسنت نے مطلع القمرین میں مولی علی کرم اللہ وجہہ الکریم کی شان میں بہت دلنشین کلام فرمایا ، آپ بھی پڑھیے اور اس کلام سے لطف اندوز ہوں

امام اہلسنّت مولی علی رضی اللہ عنہ کے فضائل خاصہ کے منکرین پر رد کرتے ہوئے ارشاد فرماتے ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔!

: ہاں وہ کون ہے؟ کہ جسے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ لوگ مختلف پیڑوں سے ہیں او میں اور وہ ایک درخت سے ہیں۔۔ ہاں! وہ علی مرتضیٰ ہے مصطفی کی شاخ اور آل مصطفیٰ کی جڑ۔

ہاں وہ کون تھا؟ جسے نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے ایک لشکر میں بھیجا جب وہ ہمارا محبوب روانہ ہوا محبت مصطفوی نے جوش فرمایا حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے دونوں ہاتھ بلند کر کے دعا کی " اللہم لا تمتنی حتی ترینی علیا" الہیٰ مجھے دنیا سے نہ اٹھانا جب تک علی کو نہ دیکھ لوں۔۔ ہاں! وہ علی ہے محبوب خدا و مطلوب مصطفٰی صلی اللہ علیہ وسلم و رضی اللہ عنہ

ہاں وہ کون ہے؟ جس کی نسبت رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کا ارشاد ہے اللہ نے ہر نبی کی ذریت اس کی صلب میں رکھی اور میری ذریت اس کی پشت میں۔۔ ہاں! وہ علی ہے ابو الآئمۃ الطاہرین کرم اللہ وجہہ الکریم۔
ہاں وہ کون تھا؟ جسے بشارت دیتے ہیں تو روز قیامت قسیم نار و جنان ہے۔۔ ہاں! وہ علی ہے سید الابرار و قاتل الکفار رضی اللہ عنہ

ہاں وہ کون ہے؟ جس معراج کے جانے والے ، عرش پر قدم رکھنے والے نے حکم دیا میرے کندھوں پر چڑھ سقف کعبہ سے بت گرا دے اور جب وہ بلند اختر چڑھا اپنے کو ایسے مقام رفیع پر پایا کہ فرماتا ہے کہ مجھے خیال آتا تھا اگر چاہوں تو آسمان کا کنارہ چھو لوں۔۔ ہاں! وہ علی ہے بالا منزلت والا کرم اللہ وجہہ الکریم

ہاں وہ کون ہے؟ جسے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم غزوہ تبوک میں ساتھ نہ لے گئے عرض کیا حضور مجھے عورتوں بچوں میں چھوڑے جاتے ہیں ارشاد ہوا کیا تو راضی نہیں کہ تو مجھ سے بمنزلہ ہارون کے ہو موسیٰ سے مگر میرے بعد نبی نہیں۔۔ ہاں! وہ علی ہے برادر احمد خلیفہ امجد رضی اللہ عنہ

ہاں وہ کون ہے؟ جو تمام مسلمانوں کا مولیٰ بنا اور بتاکید اکید ارشاد ہوا جس کا میں مولی اس یہ مولی ، الہیٰ دوست رکھ اسے جو اسے دوست رکھے اور دشمن رکھ اسے جو اسے دشمن رکھے۔۔ ہاں! وہ علی ہے امیر المومنین و مولی المسلمین کرم اللہ وجہہ الکریم

ہاں وہ کون ہے؟ کہ روز خیبر مصطفیٰ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کل یہ نشان اسے دوں گا جس کے ہاتھ پر فتح ہو گی خدا و رسول اسے پیارے اور وہ خدا و رسول کا پیارا ، رات بھر لوگوں میں چرچا رہا دیکھیئے کسے عطا ہو ، صبح حضور نے اس فتح نصیب کو نشان عطا کیا۔۔ ہاں! وہ علی ہے حرز اسلام و شیر ضرغام کرم اللہ وجہہ الکریم

ہاں وہ کون ہے؟ کہ مصطفی صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنی مسجد اقدس میں بحالتِ جنابت گزرنا اپنے لیے جائز رکھا یا اس کے لیے۔۔ ہاں! وہ علی ہے طاہر اطہر طیب اعطر کرم اللہ وجہہ الکریم

ہاں وہ کون ہے؟ کہ جب مصطفی صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنے اصحاب کرام میں مواخات کی وہ مصطفی کا پیارا روتا آیا کہ مجھے کسی کا بھائی نہ بنایا ، حضور اقدس صلی اللہ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا" انت أخی فی الدنیا و الآخرۃ" تو تو میرا دنیا آخرت میں بھائی ہے۔۔ ہاں! وہ علی ہے آفتاب مکارم ماہتاب بنی ہاشم رضی اللہ عنہ

ہاں وہ کون ہے؟ کہ جسے فصل قضا و رفع خصومات میں تمام صحابہ کرام میں ترجیح بین ہے یہاں تک کہ فاروق جیسا خلیفہ بلند رتبہ پناہ مانگے اس قضیے دشوار سے جس میں وہ حاضر نہ ہو اور بارہا کہے کہ اگر وہ نہ ہوتا تو عمر ہلاک ہو جاتا۔۔ ہاں! وہ علی ہے صاحب رائے ثاقب و فکر صائب کرم اللہ وجہہ الکریم

ہاں آج کس شیر شرزہ سے غضب ناک ہو کر سپر ہاتھ سے گری ہے تو خیبر جیسے قلعہ کا دروازہ اکھاڑ کر سپر بنایا ہے جس کے زور بازو کا ملاء اعلیٰ میں شور پڑ گیا ہے۔۔ ہاں! وہ علی ہے اسد حیدر ضیغم غصنفر کرم اللہ وجہہ الکریم

ہاں آج میدان احد میں کس صف شکن شمشیر زن شیر افگن نے تیغ شرربار کی وہ بجلیاں چمکائی ہیں کہ لشکر ظفر پیکر مصطفی صلی اللہ علیہ وسلم میں منادی پکار رہا ہے " لا سیف الا ذو الفقار و لا فتی الا علی الکرار"۔۔ ہاں! وہ علی ہے شیر خدا بازوئے مصطفی صلی اللہ علیہ وسلم۔

ہاں وہ کون ہے؟ جسے روز قیامت ساقی کوثر بنائیں گے اور اس کے ہاتھ سے تشنگانِ امت کو سیراب فرمائیں گے۔۔ ہاں! وہ علی ہے ابر سخاوت بحر کرامت کرم اللہ وجہہ الکریم

ہاں وہ کون ہے؟ کہ معرکہ محشر میں صراط کا بندوست اس کے ہاتھ ہو گا ، جب تک وہ پروانۂ اجازت نہ لکھ دے گزر نہ ملے گا ۔۔ ہاں! وہ علی ہے ہادی کریم و صراطِ مستقیم رضی اللہ عنہ

اے رضائے دل افگار ہماری تو جان اس ماہروی گلعذار گلرویی ماہ رخسار کی ہر ادائے شیریں پر نثار جو فاطمہ جیسی دلہن کا دولہا بنا۔ " انت منی و انا منک " کا سہرا باندھا ۔۔۔۔ صدیق و فاروق نے درخواست کی صغر سنی کے عذر سے قبول نہ ہوئی جب علی نے کیا مرحباً و اہلاً جو


Wednesday, March 23, 2022

Pakistan Day 23rd March Message Allaamah Kaukab Noorani Okarvi

Pakistan Day

 

Message from Madinah Shareef on Pakistan Resolution Day 23rd March -Hazrat Allaamah Kaukab Noorani Okarvi

 


بسم اللہ والحمد للہ والصلوة والسلام علی رسول اللہ۔ اس وقت دیار

 حبیب کریم مدینہ منورہ میں ہوں اور استغاثہ پیش کر رہا ہوں کہ ھم معافی چاهتے ہیں، وہ وطن عزیز مملکت خداداد پاکستان جو دین اسلام کے عملی نفاذ کے لیے بیش بہا قربانیاں دے کر حاصل کیا گیا تھا لیکن 74 برس گزر جانے کے باوجود سیاست کاران اور مسلط ھونے والے حکمران طبقے نے اس حوالے سے کوئی قابل ذکر کارکردگی کا مظاہرہ نہیں کیا بلکہ ملک میں کھلم کھلا خلاف اسلام کارروائیاں جاری رہی ہیں اور ھم اجتماعی توبہ بھی نہیں کر رہے۔ موجودہ اپوزیشن یعنی سابق حکمرانوں کا بھی دین و ملت کے حوالے سے کردار منفی ہی رہا ہے ۔ موجود مسلط وزیر اعظم نے 126 دن دھرنا دے کر جو نامناسب روایت قائم کی اور جس طرح اقتدار میں آئے وہ بھی کوئی ڈھکی چھپی بات نہیں اور اقتدار پا کر اپنے ہی اقوال اور وعدوں کے برملا خلاف جو کچھ کیا وہ ھماری تاریخ کا سیاہ باب ھے۔ بد زبانی اور بد کلامی کی بری روایت قائم کی۔ عریانی، فحاشی، رشوت ، سود، شراب خوری، اخلاق باختگی اور جھوٹ و منافقت کی بہتات،  ہوش ربا مہنگائی وغیرہ،  ایک لمبی فہرست ہے بے نظمی اور بد انتظامی کی۔ اس وزیر اعظم کے وابستگان کی سیاہ کاریوں اور آلودگیوں کا سلسلہ اس سے بھی بدتر ہے۔ ذمہ دار وزیر ٹی وی پر خاتون سے بلا جھجک کہتا ہے کہ "وہ جتنا چاہے کم لباس پہنے ،میں اس کو سپورٹ کروں گا " ۔ اقتدار حاصل کرنے اور اس کو بچانے کے لیے، اسپیکر اور ڈپٹی اسپیکر کے لیے جو حربے اپنائے گئے،قوم نے بھلائے نہیں۔   کبھی انھیں یورپ کی خوش نودی عزیز تھی اور  اب پرواہ نہیں۔ ناموس رسالت کے پہرہ داروں کے لیے جو گھناؤنا گھٹیا طرز عمل رکھا گیا وہ بھی اس حکومت کی بد ترین سیاہ کاری کے طور پر یاد رہے گا۔ اس وزیر اعظم نے رسول اکرم صلی اللہ علیہ و آلہ وسلّم کے لیے "ذلیل ہوئے " کے لفظ کہے، اصحاب النبی کے لیے نامناسب لفظ کہے اور توبہ نہیں کی، اب انھیں پھر اپنا اقتدار بچانا ہے تو دین کی اصطلاحات اور احکام کا من مانا استعمال کر کے سنگین جرم کر رہے ہیں۔ کیا وزیراعظم کو "امر بالمعروف اور نہی عن المنکر " کی تفصیل اور اس کی ترویج کی پوری معلومات ہیں؟ کیا وہ ریاست مدینہ کے دعوے اور وعدے کے خلاف اپنے مزاج اور عمل سے آگاہ ہیں؟ امر بالمعروف کے عنوان کا ایسا استعمال باعث تشویش ھے۔ انھیں یاد رہے  کہ دنیا اور یہ اقتدار عارضی ہے، بہتر ہوگا کہ وہ دین اور ملک کو کھلونا نہ سمجھیں کیونکہ دین میں مداخلت اور ملک سے کھلواڑ کا وبال اور انجام بہت شدید اور سنگین ہوتا ہے۔۔ اللہ کریم جل شانہ اپنے حبیب کریم صلی اللہ علیہ و آلہ وسلّم کے صدقے میرے وطن کی حفاظت فرمائے اور ھر طرح کے خطرات اور دشمنوں سے بچائے۔ آمین

Friday, March 18, 2022

Suraah-Soorah Kahf Ka Bayaan- Shabaan- Allamah Kaukab Noorani Okarvi- Audio Speech



                                      

#Shaban-Soorah Kahf Ka Bayaan- Shabaan- 

Allamah Kaukab Noorani Okarvi- Audio Speech


shabaan soorah kahf ka bayaan speech allama kokab noorani okarvi
Shabaan
                                    

Shab e Baraat/ Baraa'at -Shabaan- Lecture- First Thing we need to do is Ask for Forgiveness- Shab e Baraa'at Bayaan- Allaamah Kaukab Noorani Okarvi

Shabaan- Lecture- First Thing we need to do is Ask for Forgiveness- Shab e Baraa'at Bayaan- Allaamah Kaukab Noorani Okarvi
S

Friday, March 11, 2022

Shabaan Speech- Allamaah Kaukab Noorani Okarvi-Shab eBaraa'at

Shabaan Speech- 

 Hazrat Allamaah Kaukab Noorani Okarvi-Shab eBaraa'at

 



Shabaan -Dua, Du‘aa-e-Nisf Sha‘ Baan-ul-Muazzam-

          Shabaan -Dua, Du‘aa-e-Nisf Sha‘ Baan-ul-Muazzam-

#shaban #dua #shabebarat
#dua-#shabebarat
Shabe barat dua

shabaan book allama kokab noorani okarvi


DU‘AA-E-NISF SHA‘ BAAN-UL-MUAZZAM

DU'AA
Bismil-Laahir-Rahmaa Nir-Raheem

Al-Laahum-ma In-naka ‘Afuw-wun Kareemun

Tuh ib-bul ‘Afwa Faa‘ fu ‘An-naa Yaa Ghafooru Yaa

Kareemu Yaa Raheemu. 3 times

Then read the following 1 time

Ilaahee Joodu ka Dal-lanee ‘Alieka, Wa Ih saa nuka Ausa lanee Ilaieka, Wa Kara mu ka Qar-raba nee Ladaie ka, Ash ku Ilaieka Maalaa Yakh faa ‘Alieka, Wa As’aluka Maalaa Ya‘suru ‘Alieka, Iz ‘ilmu ka Bi

Haalee Kafaa nee, ‘An Su’aalee. Yaa Mufar-ri ja Kurabil Makroo beena Far-rij ‘An-ni Maa Anaa Feehi Laa Ilaaha Il-laa Anta Z ahrul-laa Jeena Wa Jaarul Musta jeereena Wa Maa’ manul Kha’ifeen.

Al-Laahum-ma Yaa Zal Man-ni Wa Laa Yu Man-nu ‘Alaiehi, Yaa Zalja laali Wal Ikraa mi Yaa Zat -t auli Wal In‘aam, Laa Ilaaha Il-la Anta

Z ahrul-Laajeen. Wa Jaarul Musta jeereen, Wa Amaa nul khaa’i feen, Al-Laahum-ma In kun ta Katab tani ‘Indaka Fi Um-mil Kitaabi Shaqiy-yan Au mah ru man Au mat ru dan Au Muqat-taran Alaiey-ya Fir-Rizqi Faa’m hu Al-Laahum-ma Bi fad lika Shaqawati Wa Hirmanee Wa Tardee Waqti taa Ra Rizq. Wa As bit nee ‘Inda ka Fee Um-mil Kitaa bi Sa‘eed am-mar Zau Qam-mu Waf-fa Qal-lil Khai raat. Faa In-na Ka Qulta Wa Qau lukal H aq-q. Fee Kitaa bikal Mun zal. ‘Alaa Lisaani Nabiy-yeekal Mur sal. Yam Hul-Laahu Maa Ya Shaa’u Wa Yus bitu. Wa ‘In dahu Um-mul Kitaab. Ilaahee Bit-ta jal-lil ‘Azam. Fee Laiela tin-nis fi Min Shahri Sha‘a baa Nal Mukar-ram. Al-lati Yuf ra qu Fee haa Kul-lu Am rin Hakee maw-Wa Yubram. An Tak shifa ‘An-na Minal balaa’i Wal Balwaa’i Maa Na‘a laamu Wa Maa Laa Na‘a lam. Wa Anta Bihi A‘a lam. In-naka Antal A‘az-zul Akram. Wa Sal-lal-Laahu Ta‘aalaa ‘Alaa Saiy-yidinaa Wa Maulaanaa Muhammadińw-Wa ‘Alaa Aalihi Wa As haabihi Wa Baarak Wa Sal-lam. Wal Hamdu Lil-laahi Rab-bil ‘Aalameen.


Excerpts from ……. ‘Sacred Phrases Of The Holy Masters’

[Auraad e Mashaikh]