Showing posts with label Article. Show all posts
Showing posts with label Article. Show all posts

Thursday, May 9, 2024

The Ettiquette of Observing Jumah-Friday in Islaam-Urdu Article-ﺁﺩﺍﺏ ﻳﻮﻡِ ﺟﻤﻌﻪ۔

THE ETIQUETTE OF OBSERVING FRIDAY-AADAAB YAUM E JUMAH

Article by Hazrat Allaamah Kaukab Noorani Okarvi

ﺁﺩﺍﺏ ﻳﻮﻡِ ﺟﻤﻌﻪ :

ﺗﻤﺎﻡ ﺗﻌﺮﯾﻒ ﺍﻟﻠﮧ ﺗﻌﺎﻟﯽٰ ﮐﮯ ﻟﯿﮯ ﮨﮯ ﺟﺲ ﮐﺎ ﻓﺮﻣﺎﻥ ﮨﮯ :

ﻳَﺎ ﺃَﻳُّﻬَﺎ ﺍﻟَّﺬِﻳﻦَ ﺁﻣَﻨُﻮﺍ ﺇِﺫَﺍ ﻧُﻮﺩِﻱَ ﻟِﻠﺼَّﻠَﺎﺓِ ﻣِﻦ ﻳَﻮْﻡِ ﺍﻟْﺠُﻤُﻌَﺔِ ﻓَﺎﺳْﻌَﻮْﺍ ﺇِﻟَﻰٰ ﺫِﻛْﺮِ ﺍﻟﻠَّـﻪِ ﻭَﺫَﺭُﻭﺍ ﺍﻟْﺒَﻴْﻊَ ۚ ﺫَٰﻟِﻜُﻢْ ﺧَﻴْﺮٌ ﻟَّﻜُﻢْ ﺇِﻥ ﻛُﻨﺘُﻢْ ﺗَﻌْﻠَﻤُﻮﻥَ

[ ﺍﻟﺠﻤﻌﺔ : 9 ‏]

‏( ﻣﻮﻣﻨﻮ ! ﺟﺐ ﺟﻤﻌﮯ ﮐﮯ ﺩﻥ ﻧﻤﺎﺯ ﮐﮯ ﻟﯿﮯ ﺍﺫﺍﻥ ﺩﯼ ﺟﺎﺋﮯ ﮔﯽ ﺗﻮ ﺍﻟﻠﮧ ﮐﮯ ﺫﮐﺮ ﮐﯽ ﻃﺮﻑ ﻟﭙﮑﻮ ﺍﻭﺭ ﺧﺮﯾﺪ ﻭﻓﺮﻭﺧﺖ ﺗﺮﮎ ﮐﺮﺩﻭ، ﺍﮔﺮ ﺳﻤﺠﮭﻮ ﺗﻮ ﯾﮧ ﺗﻤﮩﺎﺭﮮ ﺣﻖ ﻣﯿﮟ ﺑﮩﺘﺮ ﮨﮯ ‏) ۔

ﺍﻭﺭ ﺩﺭﻭﺩ ﻭﺳﻼﻡ ﮨﻮ ﻧﺒﯽ ﭘﺎﮎ ﷺ ﭘﺮ ﺟﻦ ﮐﺎ ﺍﺭﺷﺎﺩ ﮔﺮﺍﻣﯽ ﮨﮯ :

ﺇﻥَّ ﻣﻦ ﺃﻓﻀﻞ ﺃﻳَّﺎﻣﻜﻢ ﻳﻮﻡ ﺍﻟﺠﻤﻌﺔ

Tuesday, April 2, 2024

گلشن تیری یادوں کا مہکتا ھی رھے Article Hazrat Allaamah Kaukab Noorani Okarvi Naamoos e Risaalat-22 Ramadan

 



مُحافظِ ناموسِ رسالت، مجاھدجنگِ آزادی علامہ سیدکفایت اللہ کافی شہید رحمہ

یوم شہادت 22 رمضان المبارک


سید کفایت علی کافی رحمہ اللہ نےقلعہ کی چھت پر کھڑے ہو کر ایک نظر بھاگتے انگریز کو دیکھا اور پھر سجدے میں گر گئے مرادآباد خالی ہو چکا تھا۔

انگریز سامراج شکست کھا چکا تھا۔

سارا شہر سید زادے کے گرد جمع ہوچکا تھا ، نواب نے آگے بڑھ کر سید کفایت علی کافی علیہ الرحمہ کا شکریہ ادا کیا اور "صدرالشریعہ" کے عہدے سے نوازا۔

اندر کے غداروں کی وجہ سے 1857ء کی تحریک کچلی جا چکی تھی انگریز دوبارہ حاکم بن چکا تھا مراد آباد پر پھر سے انگریز قابض ہو چکا تھا سید کفایت علی کافی رحمہ اللہ گرفتاری سے قبل انگریز کے خلاف جہاد کا فتوی صادر کر چکے  تھے  جسے بدایوں، بریلی، اترکھنڈ میں ہر جگہ مسلمانوں کو پڑھ کر سنایا جاچکا تھا۔

Tuesday, July 25, 2023

The Status of Hazrat Imaam Husiaen Article- Allamah Kaukab Noorani Okarvi


Haqeeqat e Abadee Hai Maqaam e Shabbeeree

Badaltay Rehtay Hayñ Andaaz e Kofi o Shaamee

(Standpoint and the status of Shabbeer (Imaam Husaien) is the Reality of Eternity
The styles of Kofee and Shaami have been changing)


 Written by
Allaamah Kaukab Noorani Okarvi

The sacred Holy Qur’aan has commanded the love and adoration of the close relatives of the beloved Holy Prophet (Sallal Laahu ‘Alaiehi Wa Sallam) on us.  Moreover in several sayings of the beloved Holy Prophet (Sallal Laahu ‘Alaiehi Wa Sallam) highly esteem attributes and qualities of the relatives of the Prophet has been specified.  It is also evident the clear detail in the Holy Qur’aan of severe wrath for the one inflicting pain to the Prophet.

Friday, June 2, 2023

Two Hundred Years Ago- English Education Act -


آج سےتقریبا دو سو سال پہلے 

برصغیر میں سکول نہیں بلکہ مدرسے ہوتے تھے 

جہاں دین اور دنیا یعنی

( قرآن مجید، حدیث مبارکہ اور جدید سائنس) 

دونوں کی تعلیم دی جاتی تھی۔ 

پھر لارڈ میکالے آ گیا۔

The Importance of Madrasah's -Article from Urs Magazine

 

AN EYE-OPENING ARTICLE ON MADRASSAS:

 

Allamah Iqbaal had said: “Let these Madrassas remain as they are. If these Madrassas and their Dervishes who sit on their broken mats do not remain, then remember that you will be in the same condition as the Muslims I have seen in Andalusia and Granada”. A few days before Eid-ul-Adhaa has passed. I was riding my bike the day after Eid when I passed in front of a Madrassa, I saw a few innocent children standing at its gate, their faces were full of light [Nooraniyat]. I went to them and greeted them, they greeted me with great respect. I said son what are you doing here? They said, "Brother, we memorize the Qur’aan here." I said did not you go home on Eid? Couple of them went inside with tears in their eyes and the rest said in a hoarse voice that no one came to pick us up, we have come from far away Chitraal. Babaa had said that I do not have fare, so you stay there.



Friday, February 3, 2023

The Great Sahaba Hazrat Ali- Hazrat Saiyyidinaa Ali [Radiyal Laahu 'Anhu], Article-Allamah Kaukab Noorani Okarvi

Saturday, August 6, 2022

Article- Muharram-(Standpoint and the status of Shabbeer (Imaam Husaien) is the Reality of Eternity: Allamah Kaukab Noorani Okarvi



Haqeeqat e Abadee Hai Maqaam e Shabbeeree

Badaltay Rehtay Hayñ Andaaz e Kofi o Shaamee

(Standpoint and the status of Shabbeer (Imaam Husaien) is the Reality of Eternity: The styles of Kofee and Shaami have been changing)



 Written by

Allaamah Kaukab Noorani Okarvi



The sacred Holy Qur’aan has commanded the love and adoration of the close relatives of the beloved Holy Prophet (Sallal Laahu ‘Alaiehi Wa Sallam) on us.  Moreover in several sayings of the beloved Holy Prophet (Sallal Laahu ‘Alaiehi Wa Sallam) highly esteem attributes and qualities of the relatives of the Prophet has been specified.  It is also evident the clear detail in the Holy Qur’aan of severe wrath for the one inflicting pain to the Prophet. 

According to a sacred Hadees Paradise will be forbidden on the person who will cause pain even to a single sacred hair of the Holy Prophet (Sallal Laahu ‘Alaiehi Wa Sallam). This is evident for Aboo Lahab (Abdul Uzzaa) who was s relative and connected to the paternal uncle of the Holy Prophet (Sallal Laahu ‘Alaiehi Wa Sallam) but a whole chapter is revealed of his condemnation for inflicting pain and verbally abusing the Holy Prophet (Sallal Laahu ‘Alaiehi Wa Sallam) and he is used as the fuel of hell.  The daughter of Aboo Lahab, Sabee’ah, became a companion by becoming a Muslim.  

Sunday, July 31, 2022

Hazrat Umar Farooq [Radiyal Laah Anha] & the Desire of the Holy Prophet (Sallal Laahu Alaiehi Wa Sallam)

Hazrat Umar Farooq [Radiyal Laah Anha] & the Desire of the Holy Prophet
 (Sallal Laahu Alaiehi Wa Sallam)


نحمدہ ونصلی ونسلم علی رسولہ الکریم 
بسم اللہ الرحمن الرحیم
’’کفٰی بالموت واعظا یا عمر‘‘اپنی انگوٹھی پر جس ہستی نے یہ جملہ نقش کروایا تھا، اس ہستی کے نزدیک موت سے بڑی کوئی نصیحت نہیں تھی۔ اس ہستی کا عہد خلافت 1435سالہ اسلامی تاریخ کا ’’زرین باب‘‘ شمار ہوتا ہے۔ اس ہستی کو حضرت سید نا عمر الفاروق رضی اللہ تعالیٰ عنہ کے نام سے یاد کیا جاتا ہے۔ عمر کی خوبیاں بیان کرنے کو بھی اک عمر چاہیے۔ قرآن واحادیث اور سیرت وتاریخ میں ان کا تذکرہ ہے اور خوب ہے ۔
میرے پیارے نبی پاک صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے انہیں چاہا اور وہ مراد رسول کہلائے ۔ یہ اس چاہت کا اعجاز تھا کہ سیدنا فاروق اعظم رضی اللہ عنہ نے میرے پیارے نبی پاک صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کو ان کی نسبتوں کو والہانہ چاہا اور ادب ومحبت کی مثالی یادگاریں قائم کیں۔
پہلے سیدنا فاروق اعظم کا کچھ تعارف ملاحظہ ہو۔
نام:عمر بن الخطاب بن نفیل بن عبدالعزی بن ریاح بن عبداللہ بن قرط بن رزاح بن عدی بن کعب بن لوئی۔ القرشی العدوی۔
کنیت :ابو حفص ۔لقب:الفاروق (نبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے عطا کیا)۔
والدہ:حَنْتَمہ بنت ہاشم بن المغیرہ بن عبداللہ بن عمر بن مخزوم۔ 
ولادت: عام الفیل کے تیرہ سال بعد اور حرب فِجار اعظم سے چار سال قبل مکہ مکرمہ میں ہوئی۔
وفات:ذی الحجہ 23ہجری کے آخری دنوں میں فجر کی نماز پڑھانے مسجد نبوی میں تشریف لائے محراب میں کھڑے ہوئے تو ابو لولؤ فیروز مجوسی نے دو دھاری خنجر کچھ اس طرح گھونپا کہ آنتیں کٹ گئیں۔ یکم محرم

Friday, April 2, 2021

Corona Virus- Kaukab Noorani Okarvi- Investigated Repost

 “AN INVESTIGATED REPOST TO THE ALLEGATIONS RAISED AGAINST OUR HONOURABLE 

HAZRAT ALLAAMAH KAUKAB NOORANI OKARVI”



Written and presented by Muhammad Zaien Qaadri
Translated into English by S.S.Z Qaadiree

On 29th May 2020, a powerful informing message entitled, 

“What is Happening Under the Masquerade of COVID-19 Coronavirus”

 was broadcasted on the social media by 

Hazrat Allaamah Dr. Kaukab Noorani. 

Some gentlemen who due to their lack of knowledge, ignorance, and shamelessness targeted allegations against our great Religious Scholar like the honorable Allaamah Saahib. I highly condemn the insults of the belligerent claims that the speech of our noble Scholar Allaamah Saahib is based on groundless and fabricated points, which are against the Science and Technology and even our intellect does not accept these facts.

I am a student of Information Technology, and despite having very little knowledge about this field, I can still say that the words of our proficient Scholar Allaamah Saahib are certainly not anecdotal. In the discourse of the valued Allaamah Saahib, these three things were highly criticized:

  1. These Islaam hostile forces want to control your behavior with the vaccine.

  2. They want to put a microchip in your body under the guise of a vaccine.

  3. They want to bring a single global digital currency system into the world.

Saturday, March 31, 2018

ARTICLE-1857 MILLAT KAY PASSBAAN





Wednesday, November 5, 2014

Hazrat Imaam Husaien [ Radiyal Laahu Anhu's] Ultimate Sacrifice- Article- Allamah Kaukab Noorani Okarvi

Hazrat Imaam Husaien [ Radiyal Laahu Anhu's] Ultimate Sacrifice- Article- Allamah Kaukab Noorani Okarvi

بسم الله الرحمن الرحیم ۔ والصلوۃ والسلام علی رسولہ الکریم
 سیدنا امام حسین نے شریعت کے اقتدار کے لیے بے مثال قربانی دی

۔ علامہ اوکاڑوی
 بےدار اور منور اذھان ھی امام پاک کی عظمت کااندازە کر سکتے ھیں ۔ شب عاشور میں خطاب
 مولانا اوکاڑوی اکادمی ( العالمی ) کے سربراە خطیب ملت علامہ کوکب نورانی اوکاڑوی نے کہا ہے کہ آزادیٴ اظہار اسی کو شایاں ھے جو پابندِ افکار ھو کیوں کہ دین و مذھب کی کمال پابندی ھی خواھشات میں تہذیب اور کردار میں ترتیب اور عظمت لاتی ہے۔ روشن فکر سے وابستہ لوگ ھی منزل پاتے ھیں اور اندھیرے دُور کرتے ھیں اور نواسہٴ رسول سیدنا امام حسین کا تو ھر حوالہ ھی نور اور خیر ھے انھوں نے پاکیزگی اور عمدگی کے اعلٰی مراتب رکھتے ھوۓ ھرگز اپنی ذات کے لیے نہیں بلکہ شریعت و سنت کے اقتدار کے لیے بے مثال قربانی دے کر اذہان و عقول کو ایسا مسخر کیااور وە فکری انقلاب بپا کیا کہ ان کا نام اور کام سبھی کے لیے زندگی اور روشنی ھوگیا،امام پاک نے واضح کردیا کہ حق ھی طاقت ہےاور حق پر ثابت قدم رھتے ھوۓ سب کچھ قربان کردینا وە فتح ھے جو صرف ان کا حصہ ھے جن کے قلب و لسان میں کمال ھم آھنگی ھوتی ہے اور یہی ان کی استقامت کو غیر متزلزل بناتی ہے۔ وە جامع مسجد گُل زارِ حبیب ، گلستانِ اوکاڑوی میں شبِ عاشور کے مرکزی اجتماع سے خطاب کر رھے تھے۔ انھوں نے کہا کہ عزمِ راسخ رکھنے والےمفاھمت و مصالحت کےنہیں جراٴت و ھمت کے خوگر ھوتے ھیں اور دین کے معاملے میں لچک نہیں پختگی ضروری ھوتی ھے کیوں کہ یہ حقیقت ہے کہ نظام میں دڑار سے نظمِِ ملت اور امن قائم نہیں رە سکتا، بلا خوفِ تردید یہ کہتا ھوں کہ بیدار اور منور اذھان ھی امام عالی مقام کی عظمت و مرتبت کا اندازە کر سکتے ھیں ، سطحی عقل و ذھن رکھنے والوں سے یہ ممکن نہیں ، امام پاک بلا شبہ دین وملت کے محسن ھیں ۔ علامہ اوکاڑوی نے کہا کہ سیدنا امام حسین مظہرِ جمال و کمالِ مصطفٰی ھیں اس لیے ان سے کسی منفی یا کمزور کردار کا کوئی تصور کیا ھی نہیں جاسکتااور واقعہٴ کربلا تو الله تعالٰی کی طرف سے امام پاک کا امتحان تھااور اس کی خبر رسولِ پاک صلی الله علیہ وسلم نے اس واقعے سے 55 برس پہلے ھی دے دی تھی اور اپنے نواسے کے لیے صبر و استقامت کی دعا بھی فرمائی تھی۔ امام پاک نہ صرف اس امتحان میں کام یاب ھوےبلکہ امت کے لیے خود کو اور اپنے بے داغ بلند مثالی کردار کو یادگار بناگئےاور معنیٴ ذبحِِ عظیم ثابت ھوے ۔ انھوں نے کہا آج دنیا پرست حبِ جاە و مال کے لیے اپنے بےڈھنگے اطوار اور داغ دار کردارکو حسینیت کہہ کر امام عالی مقام کی اھانت کے مرتکب ھوتے ھیں ۔ علامہ اوکاڑوی نے تفصیل سے واقعہ کربلا بیان کرتے ھوے کہا کہ یزیدی سفاکیت کے لرزا دینے اور دل ھلا دینے والے مصائب میں امام پاک اور ان کے اعوان و انصار کا صبر و رضا اور حق پر ثبات ان کے لیے الله تعالٰی کی مدد تھا۔ علامہ کوکب نورانی نے کہا کہ امام پاک سے محبت و عقیدت کا تقاضا ھے کہ ھم صرف شھادتِ حسین ھی کو یاد نہ رکھیں بلکہ اس عظیم مقصد کو بھی یاد رکھیں جس کے لیے آلِ رسول نے اتنی بڑی قربانی دی اور دنیا پرستی اور آخرت فراموشی سے بچیں ۔ اجتماع میں درود و سلام کے بعد خصوصی دعا کی گئی ۔ خواتین کی بڑی تعداد نے اجتماع میں شرکت کی ۔ علامہ اوکاڑوی نے کہا کہ یوم عاشورا بہت محترم دن ہےاھل ایمان اس مقدس دن کو عبادت اور نیکی میں بسر کریں اور اس دن میں کسی غیر شرعی قول و عمل کا مظاھرە نہ کریں ۔